توازون اقتصادی کونسل کا عرب امارات میں چار نئے علاقائی مراکز کے قیام کا اعلان


ابوظہبی، 16 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات کی دفاعی اور سلامتی کی صنعت کی ترقی کے جاری عمل کے تحت توازون اقتصادی کونسل نے چار نئے علاقائی مراکز کے قیام کے منصوبوں کا اعلان کیا ، جس سے آئیڈیکس 2019 کے دوران توازون اقتصادی پروگرام کے لئے نئی پالیسی کے تحت منصوبوں کی مجموعی تعداد نو ہو گئی ہے۔توازون اقتصادی کونسل کے چیف اکنامک ڈویلپمنٹ آفیسر مطر علی الرمیثی نے کہاکہ "پروگرام کا ایک اہم مقصد دفاعی اور سیکیورٹی کے شعبے میں سرمایہ کاری اور منصوبوں کو فروغ دینا ہے۔ معاہدوں کے نتیجے میں ہماری معیشت ، فوج اور صنعت کو بہت فائدہ ہوگا۔ہم "اپنے اسٹریٹجک شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کرتے ہوئے ، اپنی اسٹریٹجک ضروریات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی مقامی مارکیٹ میں علم کی منتقلی کو یقینی بنائیں گے۔ منگل کو ، دبئی ایئر شو 2019 کے تیسرے روز، توازون، یورپ کے میزائل سازی کے ادارے ایم بی ڈی اے فرانس کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کرے گا جس کے تحت ایم بی ڈی اے کا خطے میں پہلا میزائل انجینئرنگ سنٹر قائم کیا جائے گا۔توازون ابوظہبی میں فلائٹ ٹیسٹنگ سنٹر قائم کرنے کے معاہدے پر دستخط کرنے والی فرانسیسی ایرو اسپیس کی معروف کمپنی ڈسالٹ ایوی ایشن کے ساتھ بھی تعاون کرے گا۔ایف ٹی سی متحدہ عرب امارات میں ٹکنالوجی ، انسانی صلاحیتوں اور صلاحیتوں کی ترقی میں اہم کردار ادا کرے گی۔متحدہ عرب امارات میں طویل مدتی معاشی ترقی کو فروغ دینے اور مقامی کمپنیوں کی مددکرنے کے اپنے عزم کے حصے کے طور پر ، اس پروگرام نے لیونارڈو ایس پی اے ، ایرو اسپیس ، دفاع اور سیکیورٹی میں مہارت رکھنے والی اطالوی ملٹی نیشنل کمپنی اور ابو ظہبی ایوی ایشن ٹریننگ سنٹر (اے ڈی اے ٹی سی) کے مابین ایک معاہدے کے لئے بھی معاونت فراہم کی ہے معاہدے کے تحت ، ابوظہبی ایوی ایشن ٹریننگ سینٹر میں پائلٹ ٹریننگ سیمولیٹرزرکھے جائیں گے پروگرام کے تحت ، متحدہ عرب امارات میں ڈیٹا فیوژن کی صلاحیتوں کو تیار کرنے کے لئے ائیڈیک بیانات کے ساتھ بھی ایک معاہدہ کیا گیا ، جس میں انٹلیجنس ، نگرانی ، ہدف کے حصول اور جاسوسی مقاصد کے لئے سینسر ڈیٹا فیوژن ٹیکنالوجی کی نئی خدمات شامل ہیں۔مسلح افواج کی مدد کرنے میں کلیدی کردار ، یہ منصوبہ قومی صلاحیتوں میں اضافے کے ذریعے متحدہ عرب امارات میں انسانی ترقی کا ایک جدید ڈرائیور ہونے کے علاوہ جدید ترین تکنیکی قابلیت اور انٹیلیجنس فراہم کرے گا ،اس معاہدے پر بیانات کے چیف ایگزیکٹو آفیسر محمد البلوشی اور آئی ایس آر اینڈ سپیس کے لئے کو لنز ایروسپیس وی پی کیوین رافٹری نے رواں سال ، بین الاقوامی دفاعی نمائش اور کانفرنس 2019 کے دوران دستخط کیے تھے ۔متعدد دیگر منصوبوں پر بھی دستخط ہوئے جن میں زیر آب تربیتی مرکز کا معاہدہ بھی شامل ہے۔ جس میں جدید ترین سمیلیٹر شامل ہیں جو سب میرین جنگ اور بحری بارودی سرنگوں کے آپریشن اور انتظام کی پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرتے ہیں۔

ترجمہ۔تنویر ملک

http://wam.ae/en/details/1395302803299

WAM/Urdu