پیر 21 ستمبر 2020 - 12:09:55 صبح

متحدہ عرب امارات میں یمنی یہودی خاندان کا15سال بعد ملاپ

  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
  • الإنسانية تتجلى في أبهى صورها .. الإمارات تجمع شمل عائلة يمنية يهودية بعد فراق 15 عاما
ویڈیو تصویر

ابوظبی، 8 اگست،2020 (وام) ۔۔ ایک یمنی یہودی خاندان 15 سال تک علیحدہ رہنے کے بعد متحدہ عرب امارات میں دوبارہ اکھٹا ہوا ہے ۔ اس خاندان کے دوبارہ ملاپ کیلئے اماراتی حکام نے انھیں یمن سے متحدہ عرب امارات واپس لانے کیلئے سفری سہولیات فراہم کیں ۔ اماراتی حکام نے اس خاندان کے لندن میں رہائش پذیر بعض افراد کو بھی اس سے ملانے کے انتظامات کیے۔ امارات نیوز ایجنسی، وام سے گفتگو کرتے ہوئے اس خاندان کے افراد نے 15 سال علیحدہ رہنے کے بعد اکھٹے ہونے پر انتہائی خوشی کا اظہار کیا۔ انھوں نے کہا کہ یہ کسی معجزے اور ناممکن خواب کی تعبیر سے کم نہیں ہے۔ ہم اپنے دوبارہ ملاپ پر متحدہ عرب امارات کے تعاون کے شکر گزار ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ یہ متحدہ عرب امارات کے انسان دوست رویے کی مثال ہے۔ انھوں نے کہاکہ یہ اقدام متحدہ عرب امارات کے رواداری اور بقائے باہمی کی عظیم اقدار کی بھی ایک شاندار مثال ہے۔ انکا کہنا تھا کہ یہ پوری دنیا کے لئے ایک نمونہ ہے۔ اس خاندان کے والد نے اپنے بچوں سے ملاقات کے بعد کہاکہ انھیں ایسا محسوس ہوتا ہے جیسے وہ آج دوبارہ پیدا ہوئے ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ مجھے اپنے تمام بچوں اور پوتے پوتیوں سے مل کر بہت خوشی ہوئی ہے۔ انھوں نے کہا کہ انھیں رواداری، بقائے باہمی اور نیکی کے سرزمین متحدہ عرب امارات میں آکر انتہائی خوشی ہوئی ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302861031

WAM/Urdu