ہفتہ 04 دسمبر 2021 - 11:59:10 صبح

متحدہ عرب امارات،برطانیہ کا پائیدار ترقی اور معاشی تعلقات کے فروغ کیلئے نئے ایکشن پلان پر اتفاق


دبئی، 18اکتوبر، 2021 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات اور برطانیہ نے ایک نئے ایکشن پلان پر اتفاق کیا ہے جسکے تحت معاشی تعلقات کو وسیع اور صاف توانائی ، تحقیق اور ترقی ، جدت ، انفراسٹرکچر ، سیاحت ، تحفظ خوراک ، نئی ٹیکنالوجیز ، مصنوعی ذہانت ، خلاء اور چوتھے صنعتی انقلاب سمیت اہم شعبوں میں تعاون کو مزید مضبوط بنایا جائے گا۔ دونوں فریقوں نے اپنے معاشی روابط کو مضبوط بنانے اور دونوں ممالک میں پائیدار ترقیاتی حکمت عملی کی حمایت کے لیے عملی اقدامات پر بھی اتفاق کیا ہے۔ یہ اتفاق رائے متحدہ عرب امارات اور برطانوی مشترکہ اقتصادی کمیٹی کے ساتویں اجلاس کے دوران ہوا جو ایکسپو 2020 دبئی کے موقع پر منعقد کیا گیا۔ وزیر مملکت برائے خارجہ تجارت ڈاکٹر ثانی بن احمد الزیودی نے متحدہ عرب امارات برطانوی بین الاقوامی تجارت کے وزیر رانیل جے وردنا نے برطانیہ کی نمائندگی کی۔ اجلاس میں متحدہ عرب امارات کے سفیر منصور عبداللہ خلفان بلہول نے بھی ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے وزارت اقتصادیات میں خارجہ تجارتی امور کے اسسٹنٹ انڈر سیکریٹری جمعہ الکیت کی موجودگی میں شرکت کی۔ وزیر مملکت برائے خارجہ تجارت ڈاکٹر ثانی بن احمد الزیودی نے متحدہ عرب امارات اور برطانیہ کے درمیان قریبی اسٹریٹجک تعلقات کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ملکوں کے اقتصادی تعلقات ان کے بڑھتے ہوئے تعاون کا ایک اہم ستون ہیں۔ انہوں نے ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید آل نھیان کے حالیہ دورے کا حوالہ دیا جس سےدونوں ممالک کے درمیان اسٹریٹجک تعلقات کو مزید فروغ ملا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے معاشی تعاون کو بڑھانے کے لیے امید افزا امکانات ہیں اور ہم برطانیہ میں اپنے شراکت داروں کے ساتھ ہم آہنگی پیدا کریں گے تاکہ ہماری مارکیٹوں تک رسائی کے مواقع کو وسیع اور متنوع بنایا جا سکے، تجارت میں حائل رکاوٹوں کو ختم کیا جا سکے اور تجارت ، سرمایہ کاری ، صحت، اور لائف سائنسز ، انرجی اور قابل تجدید توانائی ، ماحولیاتی تحفظ ، زراعت ، فوڈ سیکورٹی ، مالیاتی خدمات ، تعلیم ، سائنسی تحقیق اور جدید ٹیکنالوجی سمیت اسٹریٹجک شعبوں میں نئے مواقع کی نشاندہی کی جا سکے۔ انہوں نے برطانوی وفد کو متحدہ عرب امارات کی کاروباری برادری میں حالیہ پیش رفت کے بارے میں آگاہ کیا جس میں '50 کے منصوبے' اور متحدہ عرب امارات کی جانب سے شروع کی گئی نئی معاشی قانون سازی اور اقدامات شامل ہیں۔ ڈاکٹر ثانی بن احمد الزیودی نے برطانوی سرمایہ کاروں ، تاجروں اور کمپنیوں پر زور دیا کہ وہ ایکسپو 2020 دبئی کا دورہ کریں اور متحدہ عرب امارات کے معاشی شعبے میں امید افزا مواقع سے فائدہ اٹھائیں۔ جے وردنا نے کہا کہ برطانیہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ اپنے معاشی تعلقات کو مضبوط بنانے کا خواہاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی نئے شعبوں کااحاطہ کرنے اور دونوں ممالک کے درمیان شراکت داری کو گہرا کرنے کے ساتھ ساتھ سرمایہ کاری کو راغب کرنے ، روزگار کے نئے مواقع پیدا کرنے اور دونوں مارکیٹوں تک برطانوی اور اماراتی کمپنیوں کی رسائی کو آسان بنانے کے لیے اپنے معاشی تعلقات کو بڑھانے کا ایک اہم موقع فراہم کرتی ہے۔ دونوں فریقوں نے ایس ایم ایز کی ایک دوسرے کی منڈیوں تک رسائی بڑھانے کے عملی اقدامات کی بھی منظوری دی۔ انہوں نے صحت کی دیکھ بھال ، بائیو ٹیکنالوجی اور دواسازی کے شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کے لیے ایک منصوبہ تیار کیا۔ اس کے علاوہ دیگر شعبوں کے درمیان صاف توانائی ، سمندری علوم ، موسمیاتی تبدیلی ، پائیدار زراعت میں تعاون بڑھانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ترجمہ:ر یاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302982282

WAM/Urdu