جمعہ 03 دسمبر 2021 - 2:44:29 صبح

کاروباری وسرمایہ کاری تعلقات کے فروغ کے لئے اسرائیل کے  کاروباری مشن کا دورہ ابوظہبی

  • 77
  • 00
  • 67
  • 88
  • 99

ابوظہبی ، 19 اکتوبر ، 2021 (وام) ۔۔ اسرائیل کے سب سے بڑے کاروباری مشن نے ابوظہبی کا دو روزہ دورہ مکمل کرلیا ۔اس دورے کا اہتمام اسرائیل ایکسپورٹ انسٹی ٹیوٹ (آئی ای آئی) اور بینک ہاپولیم نے ابوظہبی انویسٹمنٹ آفس (اے ڈی آئی او) کے تعاون سے کیا تھا۔ 17 سے 18 اکتوبر تک ، اسرائیل سے 250 کاروباری افراد اور تاجروں نے متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت کا دورہ کیا اور انوویشن شعبے کے سینئر اسٹیک ہولڈرز سے ملاقاتیں کی۔ ابو ظہبی ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈویلپمنٹ (اے ڈی ڈی ای ڈی) کے چیئرمین محمد علي الشرفا نے کہا کہ ابوظہبی اور اسرائیل خطے کی ترقی ، خیالات کے تبادلوں اور مشترکہ مقصد کے لیے مل کر کام کرنے کے مواقع تلاش کرنے کے لیے جدت کے استعمال پر متفق ہیں۔ گزشتہ دو روز کے دوران دیکھا گیا کہ دونوں مارکیٹیں مزید تعاون کے لئے پرعزم ہیں۔ مالیاتی خدمات ، توانائی اور صحت سمیت ابوظہبی اپنے وسائل ، انفراسٹرکچر اور مواقع کے ساتھ اسرائیلی کمپنیاں کو مدد کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ابراہیمی معاہدوں کے بعد سے اے ڈی آئی او دونوں معیشتوں کو جوڑنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ اسرائیل میں اے ڈی آئی او اپنے دفتر کے ذریعے ، اسرائیلی کمپنیوں کی حمایت کو دوگنا کرتے ہوئے باہمی مفاد پر مبنی مواقع کو آسان بنانے کے لیے ایک پل کا کام کررہا ہے۔ بینک ہاپولیم کے سی ای او ڈو کوٹلر نے کہا کہ بینک اپنے صارفین کے لیے نئی منڈیوں میں سہولت کاری کا کردار جاری رکھے ہوئے ہے بینک نے خلیجی ممالک میں داخلے کی حکمت عملی اپنائی ہے ، اور موجودہ وفد اس کے ساتھ روابط قائم کرنے میں اہم کردار ادا کرے گا۔ آئی ای آئی کے چیئرمیں ، ادیب باروچ نے کہا کہ ابراہیمی معاہدوں کے ایک سال بعد متحدہ عرب امارات کا دورہ کرنے والا کاروباری وفد دونوں ملکوں کی مشترکہ کاروباری سرگرمیوں میں اہمیت کا حامل قدم ہے۔معاہدے سے ایک نیا دروازہ کھولا ہے۔تعلقات کو مضبوط بنانے کے لیے سفارتی انفراسٹرکچر۔اسرائیل ایکسپورٹ انسٹی ٹیوٹ وزارت اقتصادیات میں فارن ٹریڈ ایڈمنسٹریشن کے ساتھ مل کرکام کرنے پر خوش ہے ۔ اسرائیلی دورے کا آغاز کاروباری فورم سے ہوا جس میں ابوظہبی اور اسرائیل کے حکومتی اور صنعت کار رہنماؤں نے شرکت کی۔ فورم کے مقررین میں وزیر مملکت برائے خارجہ تجارت ڈاکٹر ثاني بن أحمد الزيودي،اے ڈی ڈی ای ڈی کے چیئرمین محمد علی الشرفا ، یو اے ای چیمبرز کے چیئرمین عبداللہ ایم المزروعی،بینک ہاپولیم کے چیئرمین ،روبن کروپک ، آئی ای آئی کے چیئرآدیوبروش اور عرب امارات میں اسرائیل کے سفیرعامر حائیک شامل تھے۔ کاروباری مشن نے دوسرے دن اعلی ترقی کے شعبوں کے حوالے سے تفصیلی آگاہی حاصل کی۔ وفد نے ابوظہبی کے اہم کاروباری حکام سے مل کر اس شعبے سے متعلق سرمایہ کاری کے مواقع اور دستیاب سپورٹ کے بارے میں مزید معلومات حاصل کیں۔ اسرائیلی کمپنیوں اور سرمایہ کاروں کی میزبانی ابوظہبی ایگریکلچر اینڈ فوڈ سیفٹی اتھارٹی (اے ڈی اے ایف ایس اے) ، ابوظہبی گلوبل مارکیٹ ، اے ڈی پورٹس گروپ ، محکمہ صحت - ابوظہبی ، کیزاد ، مصدر اور زونز کارپوریشن کے سینئر ایگزیکٹوز نے کی۔ اے ڈی اے ایف ایس اے کے ڈائریکٹر جنرل سعيد البحري سالم العامري نے کہا کہ انہیں اس اہم اجلاس میں شرکت پر فخر ہےجس میں ہم اپنی اسٹریٹجک شراکت داری کو مضبوط بنانے اور تعاون بڑھانے اور سرمایہ کاری کے نئے مواقع پیدا کرنے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کر رہے ہیں۔ اے ڈی پورٹس گروپ کے صنعتی شہروں اور فری زون کلسٹر کے سربراہ عبد الله الهاملي نے کہا کہ ہم اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کی مارکیٹوں کے درمیان بڑھتے ہوئے کاروباری تعلقات کا خیرمقدم کرتے ہیں ، جو تجارت اور سرمایہ کاری کے نئے مواقع پیدا کرنے کا سبب ہے ۔ انتہائی جدید انفراسٹرکچر تک رسائی ، مضبوط لاجسٹک صلاحیتوں اور ملٹی ماڈل ٹرانسپورٹ سلیوشنز،کے ساتھ اے ڈی پورٹس گروپ اسرائیلی کاروباری اداروں کو ایک منفرد موقع فراہم کرتا ہے کہ وہ پورے علاقے میں تجارت کو بڑھا سکیں۔ محکمہ صحت کے چیئرمین عبد الله بن محمد الحامد نے کہا کہ ابوظہبی اور اسرائیل صحت کے شعبے کو فروغ دینے کے لیے یکساں وابستگی رکھتے ہیں ابو ظہبی ، جو ٹیکنالوجی اور تعاون کا ایک ابھرتا ہوا مرکز ہے ، بین الاقوامی سرمایہ کاروں کے لیے سازگار ماحول فراہم کرتا ہے ۔ مصدرسٹی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹرعبد الله بلالا نے کہا کہ متحدہ عرب امارات پہلے ہی اسرائیل کے ساتھ معاشی تعلقات بڑھانے اور ترقی دینے کے اپنے عزم کا مظاہرہ کررہااور اس حوالے سے مصدر سٹی پیش رفت کی مکمل حمایت کرتی ہے۔ 2020 میں ابراہیمی معاہدوں پر دستخط کے بعد سے ، ابوظہبی اور اسرائیل نے مشترکہ بھلائی کے لیے جدید ، ٹیکنالوجی پر مبنی سرگرمیوں میں تعاون کرنے کے حوالے سے نمایاں پیش رفت کی ہے۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302982552

WAM/Urdu