پیر 15 اگست 2022 - 10:15:37 صبح

محمد بن زاید نے صاف توانائی کے لئے ابوظبی پاور ہاؤس پر کام کا افتتاح کردیا


ابوظبی، یکم دسمبر، 2021 (وام) ۔۔ ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر عزت مآب شیخ محمد بن زاید آل نھیان نے ایک عالمی صاف توانائی پاور ہاؤس کا اعلان کیا جس کا مقصد 2050 تک نیٹ زیرو کاربن مہم کی قیادت کرنا ہے۔ قابل تجدید توانائی اور گرین ہائیڈروجن میں اپنی مشترکہ کوششوں کو مستحکم کرتے ہوئے ابوظبی نیشنل انرجی کمپنی (PJSC (TAQA، مبادلہ انوسٹمنٹ کمپنی اور ابوظبی نیشنل آئل کمپنی (ادنوک) ابوظبی فیوچر انرجی کمپنی (مصدر) برانڈ کے تحت شراکت داری کریں گی۔ عزت مآب شیخ محمد بن زاید نےمتحدہ عرب امارات کی کم کاربن، جدید حل اور مستقبل کو محفوظ بنانے کی حکمت عملی پیش کرتے ہوئےتوانائی کی منتقلی کو اپنا نےپر روشنی ڈالی جس سے قوم کی 2050 تک نیٹ زیروکے اسٹریٹجک اقدام تک پہنچانے کی راہ ہموار ہو رہی ہے۔ ایکسپو2020 دبئی کے متحدہ عرب امارات پویلین میں شیخ محمد بن زاید کی موجودگی میں صنعت اور ایڈوانسڈٹیکنالوجی کے وزیر اور ادنوک کے منیجنگ ڈائریکٹر اور گروپ سی ای او ڈاکٹر سلطان بن احمد الجابر، مبادلہ انوسٹمنٹ کمپنی کے گروپ چیف ایگزیکٹو آفیسر خلدون خلیفہ المبارک اور ADQ کے سی ای او اور TAQA کے چیئرمین محمد حسن السویدی نے معاہدے پر دستخط کیے۔ ابوظبی کے تین اداروں کے درمیان شراکت داری سے 23 گیگا واٹ سے زیادہ قابل تجدید توانائی کی خصوصی صلاحیت ہوگی جو کہ 2030 تک 50 گیگا واٹ تک پہنچنے کی توقع ہے۔ اس شراکت داری سے مصدر کمپنی اپنی نوعیت کی سب سے بڑی کلین انرجی کمپنیوں میں سے ایک بن جائے گی جو عالمی سطح پر صنعت کی قیادت کرنے کے لیے اچھی پوزیشن میں ہو گی۔ متحدہ عرب امارات 2023 میں COP28 کی میزبانی کرنے کی تیاری کر رہا ہے اور اس اسٹریٹجک شراکت داری سے ابوظبی اور متحدہ عرب امارات توانائی کی منتقلی میں سب سے آگے ہوں گے۔یہ نیا طاقتور امتزاج مقامی اور بین الاقوامی منڈیوں میں پاور کے ڈی کاربونائزیشن کو مزید آگے بڑھائے گاجبکہ 2050 تک نیٹ زیرو کاربن کی جانب متحدہ عرب امارات کے سفر کو تیز کرے گا اور گرین ہائیڈروجن میں اس کے اہم عالمی کردار کو مستحکم کرے گا۔ اس موقع پر ڈاکٹر سلطان الجابر نے کہا کہ متحدہ عرب امارات اپنی جوبلی منا رہا ہےایسے میں ابوظبی کے تین پاور ہاؤسز کے درمیان آج کا تاریخی تعاون ادنوک کو توانائی کی عالمی منتقلی میں سب سے آگے رکھتے ہوئے بین الاقوامی صاف توانائی کے میدان میں ہمارے داخلے کی نشاندہی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مصدر میں ہماری براہ راست دلچسپی اور اپنے شراکت داروں کے ساتھ قریبی تعاون سے ادنوک کوبہت سے دلچسپ مقامی اور بین الاقوامی قابل تجدید توانائی اور ہائیڈروجن کے مواقع سے فائدہ اٹھانےکا موقع ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ15 سال قبل جب ہماری دانشمندانہ قیادت نے مصدر کی بنیاد رکھی تھی تب سے کمپنی نے صاف توانائی اور پائیداری کے منظر نامے میں خود کو ایک عالمی علمبردار ثابت کیا ہے یہ جرات مندانہ اور مستقبل کے حوالے سے اسٹریٹجک شراکت داری مقامی اور عالمی سطح پر مصدر کی پوزیشن کو مزید تقویت بخشے گی ۔ ڈاکٹر سلطان الجابر نے کہا کہ ہائیڈروجن اور اس کے کیریئر ایندھن کے لیے ابھرتی ہوئی مارکیٹ میں ایک ابتدائی علمبردار کے طور پرادنوک کے پاس اپنی تجارتی صلاحیتوں، موجودہ انفراسٹرکچر اور لاجسٹکس سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مقامی اور بین الاقوامی ہائیڈروجن ویلیو چینز کو بڑھانے کے کئی منصوبے ہیں۔ منیجنگ ڈائریکٹر اور مبادلہ انوسٹمنٹ کمپنی کے گروپ چیف ایگزیکٹو آفیسر خلدون المبارک نے کہا کہ آج ہمارے کلین انرجی چیمپئن مصدر کے لیے ایک نئے باب کاآغاز ہے۔ پندرہ سال قبل مبادلہ نے اس یقین کے ساتھ مصدر کو قائم کیا کہ یہ جدید پائیدار اقتصادی ترقی کو آگے بڑھا سکتی ہے اور زمین کےمستقبل کو محفوظ بنا سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مصدر ایک حقیقی (Made in United Arab Emirates) کامیابی کی کہانی ہے جو ہماری طویل مدتی حکمت عملی کی عکاسی کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بدلتی ہوئی آب و ہوا کے بڑھتے ہوئے چیلنجز کا جواب دینے کے لیے ضروری ہے کہ ہم صاف توانائی پیدا کرنے کے لیے جدید طریقے تلاش کرتے رہیں۔ ہم مصدر کی مسلسل ترقی اور موسمیاتی چیلنجز کے نئے حل تلاش کرنے کے لیے کمپنی کے سفر میں تعاون کے لیےادنوک اور TAQA کے ساتھ کام کرنے کے منتظر ہیں۔ محمدحسن السویدی نے کہاکہ TAQA کی حکمت عملی کم کاربن پاور اور پانی کا چیمپئن بننا ہے۔ مصدرکے قابل تجدید توانائی کے کاروبار میں ادنوک اورمبادلہ کے ساتھ شراکت داری میں کام کر کے ہم نے2030 تک 50GW سے زیادہ قابل تجدید صلاحیت تک بڑھنے کا راستہ بنایا ہے جو ہمیں MENA کے خطے کا سب سے بڑااور قابل تجدید بجلی پیدا کرنے والے عالمی شراکت داروں میں سے ایک بناتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صاف توانائی کی صلاحیت اور اس شراکت داری میں مہارت سے فائدہ اٹھانے کایہ موقع ہمیں گرین ہائیڈروجن میں عالمی رہنما بننے کے قابل بنائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم مقامی اور دنیا بھر میں صاف توانائی کے حل تیار کرنے میں متحدہ عرب امارات کے لیے حقیقی قومی چیمپئن ہوں گے۔ محمد حسن السویدی نے کہا کہ نئی شراکت داری دو اہم شعبوں قابل تجدید توانائی اور گرین ہائیڈروجن پر ایک جامع توجہ مرکوز کرتی ہے۔ڈاکٹر سلطان الجابر توسیع شدہ مصدر ادارے کے چیئرمین رہیں گے جو قابل تجدید ذرائع اور گرین ہائیڈروجن دونوں کاروباری شعبوں کا احاطہ کرے گی۔ مبادلہ 2006 میں عالمی توانائی کے شعبے میں متحدہ عرب امارات کے قائدانہ کردار کو بڑھانے کے لیے مصدر کا قیام عمل میں لایا جس نے ملک کے معاشی تنوع اور موسمیاتی کارروائی کے ایجنڈے کو آگے بڑھانے میں مدد کی۔ آج یہ کمپنی چھ براعظموں کے 35 سے زیادہ ممالک میں سرگرم ہے اور اس نے دنیا بھر میں تقریباً 20 ارب ڈالر کے منصوبے تیار کیے ہیں۔ ترجمہ ریاض خان http://wam.ae/en/details/1395302998807

WAM/Urdu