پیر 21 ستمبر 2020 - 1:55:12 صبح

بریکنگ : برکہ جوہری توانائی پلانٹ کے یونٹ 1 کا محفوظ کامیاب آغاز ہوگیا

  • مؤسسة الإمارات للطاقة النووية تعلن بداية التشغيل الآمن لأولى محطات براكة للطاقة النووية السلمية
  • مؤسسة الإمارات للطاقة النووية تعلن بداية التشغيل الآمن لأولى محطات براكة للطاقة النووية السلمية
  • مؤسسة الإمارات للطاقة النووية تعلن بداية التشغيل الآمن لأولى محطات براكة للطاقة النووية السلمية
  • مؤسسة الإمارات للطاقة النووية تعلن بداية التشغيل الآمن لأولى محطات براكة للطاقة النووية السلمية
ویڈیو تصویر

یہ آغاز مستقبل میں آلودگی سے پاک بجلی حصول کی جانب بڑا قدم ہے اسے جوہری معیار و تحفظ کے اعلی ترین عالمی معیار اور ریگولیٹری تقاضوں کے مطابق انجام دیا گیا ابوظہبی ، 1 اگست ، 2020 (وام) ۔۔ امارات نیوکلیئر انرجی کارپوریشن ، اینک کی جانب سے آج اعلان کے مطابق اس کے ذیلی ادارے نواہ انرجی کمپنی ، نواہ نے برکہ جوہری توانائی پلانٹ کے یونٹ 1 کا کامیابی سے آغاز کردیا ہے ۔ یہ پلانٹ ابوظہبی کے الظفرہ ریجن میں قائم ہے – یہ پیشرفت متحدہ عرب امارات میں پرامن مقاصد کیلئے جوہری توانائی پروگرام میں اہم تاریخی سنگ میل ہے جس سے قوم کو آئیندہ کم از کم 60 برس کیلئے صاف شفاف ذریعہ سے بجلی میسر آئے گی – اس پلانٹ کو جوہری ریگولیشن کیلئے وفاقی اتھارٹی کی طرف سے فروری 2020 میں آپریٹنگ لائسنس حاصل ہوا تھا جبکہ نواہ کے اس کورین الیکٹرک پاور کارپوریشن ست اشتراک کے منصوبے میں فیول اسمبلی کی پہلی لوڈنگ کا عمل مارچ 2020 میں کامیابی سے مکمل ہوا تھا ۔ برکہ کے پہلے جوہری توانائی ری ایکٹر کے آغاز سے قبل اس کا جامع ٹیسٹنگ عمل مکمل محفوظ طور پر انجام پایا تھا – یونٹ 1 کے آغاز سے پہلی بار اس کے ری ایکٹر نے محفوظ طور پر ھدت پیدا کی تھی جس سے سٹیم بناکر بجلی پیدا کرنے والی ٹربائن کو چلایا جاتا ہے ۔ نواہ کی اہل اور قابل آپریٹرز ٹیم نے تمام تر عمل اور ری ایکٹری سے بجلی حصول کو محفوظ انداز میں انجام دینے پر توجہ مرکوز رکھی ۔ اس دوران کئی ہفتوں پر مشتمل عرصہ میں متعدد حفاظتی ٹیسٹ کیئے گئے جس کے بعد اب یونٹ 1 ، ملک کے قومی گرڈ کو بجلی فراہمی تیار ہورہا جس سے گھروں اور کاروبار کو صاف و شفاف ذرائع سے حاصل بجلی کے میگاواٹس میسر آئیں گے – ٹیسٹنگ کے عمل کی ملک کے آزاد جوہری ریگولیٹر ادارے ایف اے این آر نے بھی مسلسل نگرانی کی جس میں جوہری آپریٹرز کی عالمی ایسوسی ایشن ، ڈبلیو اے این او کی جانب سے جنوری 2020 میں قبل از سٹارٹ اپ جائزہ شامل تھا جس کی وجہ یونٹ 1 ، جوہری توانائی صنعت کی بہترین عالمی پریکٹس کی صف میں شامل ہوا – اینک کے سی ای او محمد ابراھیم الھمادی کا کہنا ہے کہ آج کا دن ملکی تاریخ میں واقعی یادگار لمحہ ہے ، یہ دس سال سے زائد عرصہ کے ویژن کی تکمیل ، سٹریٹجک پلاننگ اور موثرترین پروگرام مینجمنٹ کا حاصل ہے ۔ حالیہ عالمی وبائی صورتحال کے باوجود اس پلانٹ پر مصروف ٹیم نے مثالی قابلیت ، ہمت اور عزم کا مظاہرہ کیا اور یہ پیشرفت ملک کو بجلی کی کل طلب کا ایک چوتھائی کو شفاف ، قابل اعتماد اور آلودگی سے پاک ذریعہ سے بجلی فراہم کرنے کی جانب اہم قدم ہے – انہوں نے کہاکہ ملکی قیادت کے ویژن کا پایہ تکمیل تک پہنچانے کیلئے برکہ نیوکلیر انرجی پلانٹ ، قومی پیداوار کا انجن بن گیا ہے ، یہ زیرو کاربن والے ذرائع سے ملک کو 25 فیصد بجلی میسر کرے گا اور اس کے ساتھ ساتھ یہ اقتصادی کثیرالجہتی کی بنیاد بنتے ہوئے ہزاروں نئے اعلی روزگار کا باعث ہوگا اور ایک مقامی جوہری توانائی صنعت اور سپلائی چین کا قیام عمل میں لائے گا ۔ انہوں نے ملکی قیادت کیلئے بھرپور اظہار تشکر کرتے ہوئے کہاکہ ان کی مسلسل حمایت سے یہ قابل قدر کامیابی ملی ہے اور اس موقع پر عرب امارات کے متعلقہ فریقین اور کورین شراکت اور سب شریک ، اس اہم کامیابی پر مبارکباد کے مستحق ہیں – جن یہ یونٹ قومی گرڈ سے منسلک ہوجائے گا تو جوہری آپریٹر اس سے بجلی پیداوار کو بتدریج بڑھانے کا عمل جاری کریں گے جسے پے ای ٹی کہا جاتا ہے ، اس تمام تر عمل کے دوران یونٹ 1 کی مسلسل نگرانی ، ٹیسٹنگ اور جائزہ کا عمل جاری رہے گا اور ریگولیٹری ضابطہ کے مطابق اسکی مکمل پیداواری صلاحیت حاصل ہونے تک یہ نگرانی و جائزہ لیا جاتا رہے گا تاکہ حفاظت ، معیار اور سلامتی کے تقاضے پورے کیئے جاسکیں ۔ یہ تمام تر عمل چند مہینوں میں مکمل ہونے کے نتیجے میں یہ پلانٹ ملکی خوشحالی میں آنے والی کئی دہائیوں تک کردار ادا کرتا رہے گا – اس اہم پیشرفت پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے نواہ کے سی ای او انجینئر علی الھمادی کا کہنا ہے کہ یونٹ 1 کا سٹارٹ اپ ، نواہ کیلئے بڑا اہم سنگ میل ہے ، یہ پیشرفت اس بات کا ثبوت ہے کہ اس کی تیاری میں بہترین عالمی معیار کا اپنایا گیا ، اس کی تعمیر میں اماراتی افراد اور کورین شراکت داروں کا عزم اور صلاحیت اور متعدد عالمی ماہرین و تنظیموں کا تعاون شامل رہا ، یہ تمام تر صورتحال حفاظت ، معیار اور آپریشنل شفافیت کے اعلی ترین پائے کے مطابق رہی اور سٹارٹ اپ عمل تک عالمی جوہری صنعت کی اعلی مہارت کا شامل رکھا گیا – انہوں نے کہا کہ اماراتی قومی انجینئرز اور جوہری پروفیشنلز کی صلاحیت ، بہت قابل فخر ہے ، اس کے ساتھ ساتھ متحدہ عرب امارات کے نیشنل سینئر ری ایکٹر آپریٹرز اور ری ایکٹر آپریٹرز کو یہ اعزاز سند حاصل ہوئی کہ وہ ایسے پلانٹ کو محفوظ ترین انداز میں آپریٹ کرنے کے قابل ہیں – عرب دنیا میں متحدہ عرب امارات وہ پہلا اور دنیا بھر میں 33واں ملک ہے جس نے محفوظ ، صاف اور قابل اعتماد بجلی پیداوار کیلئے جوہری توانائی کا پلانٹ تعمیر کیا ۔ نرکہ پلانٹ ملک کے توانائی شعبے کو بجلی پر منتقل کرنے اور بجلی پیداوار میں آلودگی روکنے کی جانب بھی اہم پیشرفت ہے ۔ یہ پلانٹ مکمل آپریشنل ہونے کے نتیجے میں 6ء5 گیگا واٹ بجلی پیدا کرے گا جس سے فضاء میں 21 ملین ٹن سالانہ آلودگی شامل ہونے کا روکا جاسکے گا ، یہ شرح ملکی شاہرات پر 32 لاکھ کاروں کو ہٹادینے کے برابر ہے - ملک کا جوہری پروگرام 2009 میں شروع ہوا تھا اس کیلئے اینک نے جوہری توانائی کے بین الاقوامی اداروں ، آئی اے ای اے ، ڈبلیو اے این او کے تعاون اور ایف اے این آر کے موثر ریگولیٹری فرہم ورک کے مطابق پیشرفت کی ، اب تک ایف اے این آر کی جانب سے 255 سے زائد معائینے انجام دیئے جاچکے ہیں تاکہ اس پلانٹ کو اعلی ترین عالمی معیار کے مطابق بنانے کے عمل کو یقینی بنایا جاسکے ۔ اس پلانٹ کی پیشرفت میں عالمی اداروں نے بھی 40 سے زائد جائزے اورتخمینہ جات انجام دیئے – اینک نے حال ہی میں اس پلانٹ کے یونٹ 2 کی کامیاب تعمیر کرلینے کا اعلان بھی کیا ہے اور اس کے بعد اسے آپریشنل تیاری کے مراحل سے گزارا جارہا ہے ۔ برکہ پلانٹ کے یونٹ 3 اور یونٹ 4 کی تعمیر بھی آخری مراحل میں ہے جبکہ چاروں یونٹس کا مجموعی تعمیراتی کام 94 فیصد مکمل کیا جاچکا ہے – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://www.wam.ae/en/details/1395302859575

WAM/Urdu