پیر 21 ستمبر 2020 - 1:30:10 صبح

عرب امارات کے مرکزی بنک کا ٹی ای ایس ایس سکیم میں اضافی اقدامات کرنے کا فیصلہ


ابوظہبی ، 8 اگست ، 2020 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارا ت کے مرکزی بنک کے بورڈ نے معیشت کیلئے بنکنگ شعبے کی صلاحیت بڑھانے کی خاطر مارچ 2020 میں جاری کی گئی ٹارگٹڈ اکنامک سپورٹ سکیم ، ٹی ای ایس ایس کے تحت اضافی اقدامات کرنے کا فیصلہ کیا ہے – بنک کی طرف سے جاری بیان کے مطابق یہ اقدامات موجودہ دو پروڈنشل شرح کو مدنظر رکھ کر ترتیب دیئے گئے ہیں جن میں پہلی شرح خالص مستحکم فنڈنگ شرح ، این ایس ایف آر اور دوسری ایڈوانسز برائے سمتحکم وسائل شرح ، اے ایس آر آر ہے ۔ اس کے تحت بنکوں کی سٹرکچرل لیکویڈیٹی پوزیشن کے تقاضوں کو عارضی طور پر نرم رکھا جائے گا – اس اقدام سے بنکوں کو وائرس وباء کی صورتحال میں اپنے صارفین کو منفی اثرات سے بچانے کیلئے ٹی ای ایس ایس پر عملدرآمد مستحکم بنانے کی حوصلہ افزائی ملے گی ۔ یہ تبدیلی ملک کے پانچ بڑے بنکوں کیلئے لازمی خالص مستحکم فنڈنگ شرح پر اثرانداز ہوگی اور غیرملکی بنکوں سمیت دیگر تمام بنکوں کی اے ایس آر آر پر بھی اثر انداز ہوگی ۔ ان شرحات کا مقصد یہ ہے کہ طویل مدتی اثاثوں کو مستحک وسائل سے فنڈنگ کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے ۔ این ایس ایف آر اور اے ایس آر آر میں نرمی سے بنکوں کو اپنی بیلنس شیٹس ترتیب دینے میں اضافی سہولت و لچک میسر آئے گی – لازمی تھریش ہولڈ کو دونوں شرحات کے دس فیصد پوائنٹس کیلئے عارضی طور پر نرم کیا جائے گا ۔ این ایس ایف آر شرح کیلئے بنکوں کو سو فیصد تھریش ہولڈ سے نیچے لیکن زیادہ سے زیادہ 90 فیصد تک جانے کی اجازت ہوگی ۔ اے ایس آر آر شرح میں بنکوں کو تھریش ہولڈ کی 100 فیصد شرح سے زائد لیکن 110 فیصد تک جانے کی اجازت ہوگی ۔ یہ اقدام 31 دسمبر 2021 تک قابل عمل رہے گا – مرکزی بنک نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ ایف ایس ایف آر اور اے ایس آر آر کو کیلکولیٹ کرنے کے اس اقدام کا مقصد ٹی ای ایس ایس پروگرام کے تحت مرکزی بنک کی صفر لاگت والی فنڈنگ سہولت کو ، اسکی معیاد پوری ہونے یا نہ ہونے دونوں صورت میں ایک مستحکم فنڈنگ کے طور پر رکھنا ہے – مرکزی بنک کے گورنر عبدالحمید ایم سعید کا کہنا ہے کہ دو ڈھانچہ جاتی لیکویڈیٹی شرحات میں نرمی کا مقصد بنکوں کی طرف سے قومی معیشت میں وسائل کی فراہمی جاری رکھنا ہے ۔ یہ نیا اقدام 256 ارب درہم کے پہلے سے جاری ٹی ای ایس ایس پر عملدرآمد کو تعاون بخشے گا ، این ایس ایف آر اور اے ایس آر آر میں عارضی نرمی سے مرکزی بنک کے ان دیگر اقدامات کو بھی تقویت ملے گی جو ٹی ای ایس ایس کیلئے کیئے گئے ہیں تاکہ نجی و کارپوریٹ اور درمیانے درجے کے کاروبار و انفرادی کاروبار پر کووڈ 19 کے منفی اثرات کو کم سے کم کیا جاسکے – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302860989

WAM/Urdu